تمام خبروں کا ڈراپ سین –!! حکومت نے عید الاضحیٰ پر کتنی چھٹیوں کی  کی سمری تیار کر لی؟ حتمی فیصلہ, Urdu Gold News

تمام خبروں کا ڈراپ سین –!! حکومت نے عید الاضحیٰ پر کتنی چھٹیوں کی کی سمری تیار کر لی؟ حتمی فیصلہ

اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک ) عید الاضحیٰ کی چھٹیوں کے حوالے سے سمری تیار کر لی ہے، عید الاضحیٰ پر تمام سرکاری و نجی ملازمین کو تین دن کی چھٹیاں دی جائیں گی، کورونا کے پیش نظر اضافی چھٹیاں نہ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے، جمعہ ،ہفتہ اور اتوار عید الاضحیٰ کی تین چھٹیاں ہونگی، پیر سے تمام سرکاری و نجی ادارے کھل جائیں گے-اس سے قبل وزیر اعظم عمران خان کے معاونِ خصوصی ڈاکٹر شہباز گِل کا کہنا ہے کہ عید کے تینوں دن چھٹی ہوگی، اس مرتبہ زیادہ چھٹیاں دینے کا فیصلہ اس لیے نہیں کیا گیا کیونکہ لوگ گھروں سے زیادہ باہر نہ نکلیں، گھومنا پھرنا کم از کم ہو- تفصیلات کے مطاق وزیر اعظم عمران خان کے معاونِ خصوصی ڈاکٹر شہباز گل کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے حوالےسے عیدالاضحٰی پر کم از کم چھٹیاں دینے کا اصولی فیصلہ کیا گیا ہے- خیال رہے کہ دنیا نیوز نے دعویٰ کیا ہے کہ اس سال عید الاضحیٰ پاکستان میں اکتیس جولائی کو ہونے کے امکانات ہیں- کورونا وائرس بھی پاکستان میں ابھی ختم نہیں ہوا اس لیے حکومت نے عید الاضحیٰ پر اس سال صرف تین چھٹیاں دینے کا فیصلہ کیا ہے، یہ تین چھٹیاں بھی صرف ایک چھٹی کے مترادف ہونگی، جمعہ عید کا پہلا دن بن رہا ہے اور ہفتہ اور اتوار کو ویسے ہی چھٹی ہوتی ہے تو یوں حکومت کی جانب سے صرف ایک ہی چھتی دی جا رہی ہے، یہ فیصلہ اس ضمن میں کیا گیا ہے تا کہ عوام غیر ضروری سفر نہ کریں – دوسری جانب وزیر وم کے نام اپنے خاص پیغام میں وزیراعظم کا کہنا تھا کہ عیدالاضحیٰ آنے والی ہے میں سب سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ نہ کریں جو عیدالفطر کے موقع پر کیا-عیدالاضحیٰ کی آمد کے پیش نظر وزیراعظم نے قوم کے نام خصوصی پیغام میں عیدالفطر کے موقع پر کی گئیں بے احتیاطیوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ بڑی عید پر وہ نہ کریں جو پچھلی عید پر کیا-ان کا کہنا تھا کہ پچھلی عید پر ہم نے لاپرواہی کا مظاہرہ کیا اس بات کا خیال نہیں کیا گیا کہ یہ وائرس ایک جگہ لوگوں کے جمع ہونے سے زیادہ تیزی سے پھیلتا ہے-وزیراعظم کا کہنا تھا کہ چونکہ ہم نے لاپرواہی کی اس لیے عید کے موقع پر بہت تیزی سے وائرس پھیلا نتیجتاً میں ہمارے ہسپتالوں اور فرنٹ لائن ورکرز پر دباؤ آیا اور بدقسمتی سے اموات میں اضافہ ہوا اور وائرس اپنے عروج پر پہنچا-انہوں نے کہا کہ عید کے بعد اسمارٹ لاک ڈاؤن اور دیگر اقدامات سے کورونا کیسز کی تعداد میں کمی ہوئی-مذکورہ ہسپتال 250 بستروں پر مشتمل ہے جسے 40 دن کی ریکارڈ مدت میں تعمیر کیا گیا، اس ہسپتال میں کورونا سے متاثرہ مریضوں کو آئیسولیشن میں رکھا جائے گا-اْفتتاح کے موقع پر وزیراعطم کے ہمراہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باوجوہ، چینی سفیر، چیئرمین این ڈی ایم اے جنرل محمد افضل اور اعلیٰ سول اور فوجی افسران موجود تھے جبکہ وزیراعطم کو آئیسولیشن ہسپتال کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ بھی دی گئی-

[Article Source: Hassan Nisar]

Facebook Comments