بریکنگ نیو ز: پی آئی اے کی دھوم،  ایک  دفعہ  پھر پوری دنیا   میں —!!! گنجائش سے زیادہ بکنگ، پاکستانیوں  کے  لیے  بڑی  خبر آ گئی, Urdu Gold News

بریکنگ نیو ز: پی آئی اے کی دھوم، ایک دفعہ پھر پوری دنیا میں —!!! گنجائش سے زیادہ بکنگ، پاکستانیوں کے لیے بڑی خبر آ گئی

مانچسٹر(ویب ڈیسک) پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن (پی آئی اے) کے عملے نے مانچسٹر سے اسلام آباد آنے والی پرواز میں گنجائش سے زیادہ بکنگ کردی-اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق مانچسٹر سے اسلام آباد آنے والی پرواز پی کے 702 کے عملے نے اوور بکنگ کردی جس کے بعد ایئرپورٹ پر مسافروں اور عملے کے درمیان ہنگامہ آرائی ہوئی-ذرائع کے مطابق عملے نے پی کے 702 پر 140 مسافروں کی ٹکٹس زائد بک کی ہیں، ایئرپورٹ پر ہنگامہ آرائی کے سبب پرواز ڈیڑھ گھنٹہ تاخیر کا شکار ہوئی-

ذرائع کا کہنا ہے کہ مسافروں اور عملے کے درمیان ہاتھا پائی ہوئی جس کے بعد ایئرپورٹ انتظامیہ نے سیکیورٹی کے پیش نظر پولیس کو طلب کرلیا-واضح رہے کہ یورپی یونین اور برطانیہ نے بیرون ملک پھنسے پاکستانیوں کو لانے کے لیے پی آئی اے کی پروازیں تین جولائی تک چلانے کی اجازت دی ہے-یورپی یونین اور برطانیہ نے پی آئی اے پائلٹس کی جعلی ڈگری کے معاملے پر پی آئی اے کی پروازیں بند کردی تھیں بعدازاں پی آئی اے انتظامیہ، وزارت خارجہ اور پاکستانی سفرا نے یورپین حکام سے مسلسل رابطہ بھی کیا جس کے بعد اسلام آبادتا لندن اور واپسی کی پروازوں پی کے785 اور پی کے 786 کو آپریٹ کی اجازت بھی مل گئی تھی-پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن کے ترجمان عبد اللہ خان کا کہنا تھا کہ ’برطانیہ اور یورپین ممالک سے دیگر پروازوں کا بھی جلد اعلان کیا جائے گا‘-جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق ملائیشین سول ایوی ایشن اتھارٹی نے بھی مشتبہ لائسنسز کے حوالے سے پاکستان پائلٹس کی تفصیلات طلب کر لیں اور کہاتصدیق نہ ہونے پر پاکستانی پائلٹس کےملائیشین لائسنسز منسوخی کےسواآپشن نہیں ہو گا-

پاکستانی پائلٹس کی مشتبہ لائسنس کے معاملے پر ملائیشین سول ایوی ایشن اتھارٹی نے تفصیلات طلب کر لیں، ڈپٹی ڈائریکٹر فلائٹ آپریشن ڈویڑن ملیشین سول ایوی ایشن کی جانب سے خط جاری کیا گیا-ملائیشین سی اے اے نے بذریعہ خط تعینات پاکستانی پائلٹس کی تفصیلات طلب کیں، جس میں مقامی گیارہ اداروں میں تعینات پاکستان پائلٹس کے مکمل تفصیلات طلب کی گئی ، تفصیلات میں پائلٹ کا نام، پاسپورٹ نمبر پاکستانی لائسنس نمبر طلب کیے گئے ہیں-خط میں کہا گیا اگر ملائیشین سی اے اے کا جاری کردہ اجازت نامہ موجود ہے تو وہ بھی فراہم کئے جائیں جبکہ پاکستانی سی اے اے کے جاری لائسنسز کے تحت ملائشین لائسنسز پر منتقلی کی تفصیلات بھی طلب کی گئی ہے-خط میں پاکستانی سول ایوی ایشن کو کل تک درکار تفصیلات کی فراہمی کا کہا گیا جبکہ پاکستانی پائلٹس کی لائسنس کی دوبارہ تصدیق تک کے مراحل کی تفصیلات فوری فراہم بھی کرنے کا کہا گیا-لکھے گئے خط کے مطابق پاکستانی سی اے اے کی جانب سے تصدیق نہ کئے جانے پر پاکستانی پائلٹس کو جاری کردہ ملائیشین لائسنسز منسوخ کر نے کے علاوہ کو ئی آپشن نہیں ہو گا-
[Source: Hassan Nisar]

Facebook Comments