Home / اہم خبریں / احساس کی انتہا
احساس کی انتہا

احساس کی انتہا

کہتے ہے کہ اہک دن ایک مسافر ایک ریڑھی والے سے گول گپے کھانے کے بعد میں نے پوچھا- بھائی لاہور کو جانے والی بسیں کہاں کھڑی ہوتی ہیں؟ تو انہوں نے سامنے اشارہ کرتے ہوئے کہا، کہ سامنے اس ہوٹل کے پاس میں جلدی جلدی وہاں پہنچا تو ہوٹل پہ چائے پینے والوں کا بہت رش تھا-ہم نے بھی یہ سوچ کر چائے کا آرڈر دے دیا، کہ چائے میں کوئی خاص بات ہو گی- چائے واقعی بڑی مزیدار تھی، جب ہم چائے کا بل دینے لگے تو یاد آیا کہ ول گپے والے کو تو پیسے دیے ہی نہیں- واپس دوڑتے ہوئے گول گپے والے کے پاس پہنچے اور انہیں بتایا کہ بھائی شاید آپ بھول گئے ہیں، میں نے آپ سے گول گپے تو کھائے ہیں، لیکن پیسے نہیں دیے؟ تو گول گپے والا مسکراتے ہوئے کہنے لگا- بھائی جس کے بچوں کی روزی انہی گول گپوں پہ لگی ہے، وہ پیسے کیسے بھول سکتا ہے؟ تو پھر آپ نے پیسے مانگے کیوں نہیں، میں نے حیران ہوتے ہوئے پوچھا- تو کہنے لگے بھائی یہ سوچ کر نہیں مانگے کہ آپ مسافر ہیں، شاید آپ کے پاس پیسے نہ ہوں،اگر مانگ لیے تو کہیں آپ کو شرمساری نہ اٹھانا پڑے احساس کی انتہا

Sharing is caring!

Facebook Comments

About admin

Check Also

بڑی بریکنگ نیوز: پاکستان کے بھارتی دہشت گردی کے ثبوت اقوام متحدہ میں پیش پیش ہیں ، پوری دنیا میں تہوار کے جیسی خبر - Viral News Network -VNN

بڑی بریکنگ نیوز: پاکستان کے بھارتی دہشت گردی کے ثبوت اقوام متحدہ میں پیش پیش ہیں ، پوری دنیا میں تہوار کے جیسی خبر – Urdu News

نیو یارک (ویب ڈیسک) پاکستان اقوام متحدہ کے انڈر سیکریٹری جنرل کو دہشت گردی کے …